پی ایف آئی جیسی تنظیموں نے قوم کے پیسوں کا غلط استعمال کیا ہے: صوفی حافظ احتشام الحق دہلوی

0
127
All kind of website designing

نئی دہلی، 6اکتوبر(محمدارسلان خان):اسلامک اسکالر صوفی حافظ محمد احتشام الحق دہلوی نے اپنے صحافتی بیان میں کہاکہ کیرالہ ہندوستان کی ان چند ریاستوں میں سے ایک ہے جسمیں پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے پاس ہر ضلع میں سب سے زیادہ جمع کنندگان اور استفادہ کنندگان اور سب سے زیادہ شراکت (15 کروڑ) کیساتھ مالیاتی اثرات ہیں، اب اس پرغورکریں،کیرالہ میں پی ایف آئی کے ذریعہ تشدد کی کارروائیاں بھی ملک کے دیگر حصوں کے مقابلے میں سب سے زیادہ ہیں، پروفیسر ٹی جے جوزف کے ہاتھ کاٹنے کا معاملہ، نارتھ آرمس ٹریننگ کیس، ایس ایف آئی کارکن کا قتل، کنور آئی ایس آئی ایس کی دہشت گردی کی سازش، 2021 میں حالیہ آر ایس ایس کارکنوں کا قتل وغیرہ۔ یہ فنڈنگ اور تشدد کی کارروائیوں کے درمیان ایک قطعی تعلق کی طرف اشارہ کرتا ہے، اسکے ساتھ ساتھ اسطرح کی بہت سی دوسری مثالوں نے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کوپی ایف آئی کی فنڈنگ کی جانچ کرنے پر مجبور کیا، ملک کے اندر اور ملک سے باہر۔ای ڈی کی تحقیقات سے پتہ چلتا ہیکہ پی ایف آئی کے عہدیداروں کے ذریعہ جمع کرائے گئے نقد عطیہ کی سلپس کئی ایسے لوگوں سے موصول ہوئی ہیں جنہوں نے حقیقت میں یہ عطیہ کبھی نہیں کیا، ایسے بہت سے لوگوں نے ای ڈی (پی ایم ایل اے کی تحقیقات کے تحت) کو بتایا ہیکہ انہیں ان عطیات کے بارے میں بھی علم نہیں ہے اور نہ ہی انکے پاس ایسے عطیات دینے کی مالی صلاحیت ہے،ای ڈی سلیوتھس کی زمینی تحقیقات نے اس دعوے کی تصدیق کی کیونکہ انکی مالی حیثیت پی ایف آئی کو اسطرح کے تعاون کا جواز پیش نہیں کرتی تھی کیونکہ انمیں سے زیادہ تر میسن، سائبر کیفے کے مالک، ٹی اسٹال کے مالک وغیرہ کے طور پر ملازم تھے۔حافظ احتشام نے مزید کہاکہ پی ایف آئی کی غیر ملکی فنڈنگ ٹریل کی چھان بین کرتے ہوئے،ای ڈی نے پایا کہ پی ایف آئی نے مختلف خلیجی ممالک بشمول یو اے ای،عمان، قطر، کویت، بحرین، سعودی عرب وغیرہ میں ضلعی ایگزیکٹوکمیٹیاں تشکیل دی ہیں، یہ ایگزیکٹو کمیٹیاں بغیر ہندوستان میں پی ایف آئی کو رقم بھیجنے کی ذمہ دار ہیں، کوئی پگڈنڈی چھوڑنا،فنڈز عام طور پر نقدی میں اکٹھے کیے جاتے تھے اوریاتوحوالاچینلز کے ذریعے (چھپے ہوئے) ہندوستان بھیجے جاتے تھے یاہندوستان میں مقیم رشتہ داروں اورپی ایف آئی کے اراکین کے دوستوں اور بیرون ملک کام کرنے والے ہمدردوں کے اکاؤنٹس میں بھیج کر ترسیلات کے طور پر چھپ جاتے تھے،جس درستگی کیساتھ لین دین کیے جاتے ہیں اور نقاب پوش ہوتے ہیں وہ کسی بھی آنے والی ہالی ووڈ فلم کے فلمی پلاٹ کیلئے اچھی طرح سے اہل ہو سکتے ہیں۔

نیا سویرا لائیو کی تمام خبریں WhatsApp پر پڑھنے کے لئے نیا سویرا لائیو گروپ میں شامل ہوں

تبصرہ کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here