مسلمانوں کی 14 سوسالہ تاریخ کا بدترین المیہ۔۔۔

0
616
All kind of website designing

مفتی احمد نادر القاسمی
اسلامک فقہ اکیڈمی، انڈیا

ہمارے ملک میں کورونا کے نام پر یہ جو ڈرامہ رچاگیا۔اور ملک کی ساری ایجنسی کو اس میں جھونک دیا گیا سارا نظام اور انسانی زندگی کیرفتار روک دی گئی۔۔اور کہا یہ گیا کہ یہ سب دیش کو کورونا سے بچانے کے لیے کیا گیا ۔۔۔نہ نہ۔یہ فریب ہے۔یہ صرف اورصرف ملک کے غریبوں لاچاروں ،مزدوروں اور معاشی اعتبار سے ٹوٹے ہوئے ہم جیسے انسانوں کو جسے دنیا کا سرمایہ دار طبقہ روئے زمین اپنے لئے بوجھ سمجھتاہے، المیہ یہ ہے کہ اسی سرمایہ دار طبقہ کے ہاتھ میں ملکوں کی باگ ڈور بھی ہوتی ہے یہ

مفتی احمد نادر القاسمی
مفتی احمد نادر القاسمی

کورونا کا ڈرامہ سرمایہ دار طبقہ کی جانب سے غریبوں ، مزدوروںکو یوتھینزیا کے طریقے سے مجبور وبے بس کرکے مارنے کے لیے رچی گئی ناپاک و مذموم سازش ہے۔جیسا کہ آپ نے دیکھا ہوگا ۔وہ لوگ جو کرونٹائن ہوگیے اور ان کے ساتھ ڈاکٹروں اور ان کی معاونت کرنے والے طبقہ کارویہ کیسارہا ان سے دریافت کرلیجیے۔ ۔کوروناہوتا تو کوئی نیتا کیوں نہیں مرا ۔کوئی مالدار انڈسٹریلسٹ کیوں نہیں مرا ۔کوئی بڑا عہدہ دار اور سرکاری بابو کیوں نہیں مرا کوئی دنیا میں جھوٹ پھیلانے والا مطلب مودی کا گودی میڈیا والاکیوں نہیں مرا۔یا بڑے بڑے نیتاؤں کو کورونا کیوں نہیں ہوا ۔کیا کورونا کو ایجوکیٹ کرکے اور پڑھا لکھاکراور لسٹ دے کر اوپر سے بھیجاگیاہےکہ صرف ان بھیڑ بکریوں جیسے لوگوں کو گھروں میں گھس گھس کر پکڑنا ہے۔کچھ نہیں سچ یہ ہے کہ یہ انسانیت کے خلاف سرمایہ داروں کابین الاقوامی توہین آمیز رویہ ہے ۔اور ہمارےملک میں صرف بھاجپا کی نامی کو چھپانے کے لیے یہ کورونا کاکھیل کھیلا گیاہے۔اور اسکے لیے سب سے پہلے منسٹری آف ہیلتھ کو ہاتھ میں لیا گیا ۔یہ WHOاور بل گیٹس کے ساتھ ۔یہودیوں کے اشارے پر فلسطین میں نہتھے نوجوانوں اور حماس کو کچلنے ۔مسجد اقصی سے بے دخل کرنے ۔اور بھارت میں مسلمانوں کو حاشیہ پر لانے اور بے وقعت وبے حیثیت کردینے کے لیے یہ سنگھ اور صیہونیوں کے مشترکہ ایجنڈے پر عمل اور اسٹریٹیجک پروگرام ہے ۔کوروناوائرس کوروناوائرس کے نعرے لگاکر اور اس کے نام سے دہشت زدہ ہوکرکسی بھول میں مت رہیے ۔بل گیٹس یوں ہی انڈیا نہیں آیا تھا ۔مودی جی کا یہ اعلان کہ ڈاکٹر کے ساتھ یک جہتی کے لیے تالی اور تھالی بجاناہے ۔کیا معنی ؟۔مطلب یہ کہ سب سے پہلےWHO کے ذریعہ ڈاکٹروں کو خریدا گیا، طبی دنیاکو ہائر کیاگیا ۔اور جس ڈاکٹر نے نہیں مانا اس کو دھمکا کر گھروں میں بند رہنے پر مجبور کیا گیا، پولیس کو مکمل اختیار دیاگیاکہ وہ جسے چاہے گھروں سے اٹھالے ڈنڈے مارے اور اگرکوئی مربھی جائے تو نوپرابلم۔۔میڈیکل عملہ تشکیل دیا گیا کہ گھر گھر جاکر لوگوں میں کرونا کاخوف پیداکروایا گیا۔سوشل ڈسٹینسنگ اور انفیکشن کا نام پر انسانوں کو انسان سے الگ وبے گانہ بنا دیا جائےنا اورانسانیت کے رشتے کو بھی ہمیشہ کے لئے کاٹ دیا جائے۔تاکہ کو ئی ایک دوسرے سے دکھ درد تک نہ بیان کرسکے اور اس فریب کی حقیقت آشکار ہو۔کورونا نام کی کوئی چیز نہ پہلے تھی اور نہ اس وقت ہے ۔۔۔اس کھیل کو اسی دن ملک کو سجھ لینا چاہیے تھا کہ بھارت میں کورونا نہیں ہے۔بلکہ یہودی اور سنگھ کا مسلمانوں کے خلاف مشترکہ پلان ہے۔جس پر عمل جاری ہے۔مطمئن رہئے۔مسلم ممالک اور عرب اس گیم میں جس طرح بے وقوف بنے ہیں اور بن رہے ہیں ۔اور جس طرح ایک جھوٹ اور فریب میں مبتلا ہیں ۔واللہ وبالرحمان۔۔کورونا کے نام پر یہ مسلمانوں کی ١٤ سو سالہ تاریخ کابدترین المیہ ہے ۔اب بھی وقت ہے اس دھوکے سے نکلیں۔توبہ کریں جس دین نے ایک مومن کو دوسرے مومن سے ملنے کو صدقہ ۔اس کی مسکراہٹ کو صدقہ ۔بیماری تک کوصدقہ قرار دیتے دیتے ہوئے اسے مومن کے نجات کا ذریعہ بتایا ہو۔اس کو چھونے سے بیماری ہوگی ؟ ہزار با اس فکر اور پر لاحول اور استغفر اللہ۔یہ کیسی ضعیف الاعتقادی ۔اور بددینی اور ایمان کی کمزوری اور دین کی بے جا تاویل وتشریح ہے ۔اللہ کے واسطے ۔لوگ اور خصوصاًعلما ء ٕ اس سے باز آئیں ۔اپنے ملک اور عوام کو بداعتقادی سے باہر نکالیں ۔میں خاص طور سے عالم عربی کے اہل اللہ اور علما ء سے درخواست کرتاہوں کہ وہ اس ذہنی اور فکری بوجھ کوختم کرنے کی کوشش کریں ۔’’ماہر اطبا ،ماہر اطبا ،میڈیکل ایکسپرٹس ‘‘کی رائے کے جھانسے میں نہ آئیں خواہ وہ کہیں کے بھی ہوں ۔پوری دنیا کی میڈیکل انڈسٹری اس وقتWHO کی ایجنٹ اور اس سے وابستہ لوگ بروکر کی حیثیت سے کام کررہے ہیں۔آپ بالکل نہ گھبرائیں کہ میں بیمار پڑجاوں گا تو میرا علاج کون کرے گا ۔کیا ہمیںاللہ کی ذات پر بھروسہ نہیں ہے؟ وہ آپ کو بیمار ہی نہیں ہونےدے گا۔وعلی اللہ فلیتوکل المومنون۔ اس وقت پوری دنیا میڈیکل ٹیررزم اور بقول ڈاکٹر ہشام طالب ۔طبی ارھاب اور معالجاتی دہشت گردی پر آمادہ ہے ۔سب کی ایک ہیسُر ہے ۔پیٹ میں درد کورونا ہے ۔سرمیں دردکوروونا ہے ۔نزلہ کھانسی کورونا ہے ۔پھیپھڑے میں پانی کورونا ہے ۔ ہارٹ اٹیک کورونا ہے ۔ڈی ہائیڈریشن کورونا ہے ۔مختصر یہ کہ اس وقت جوبھی ہے کورونا ہے۔اپنے رب کا خوف ہم سب کو ہر خوف سے مامون رکھے گا۔

یہ ایک سجدہ جسے تو گراں سمجھتا ہے
ہزار سجدے سے دیتا ہے آدمی کو نجات

نیا سویرا لائیو کی تمام خبریں WhatsApp پر پڑھنے کے لئے نیا سویرا لائیو گروپ میں شامل ہوں

تبصرہ کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here